تبصرے

کٹھ پتلی انتظامیہ کے حکام کیوں باہمی تنازعات میں الجھے ہوئے ہیں ؟

اہل وطن گواہ ہیں کہ کابل دوہری انتظامیہ کے موجودہ نااہل اور سرکش عہدیداروں نے نوے کی دہائی میں مجاہدین کی دور حکومت کے دوران ملک میں ایک بڑے سانحہ کو پروان چڑھایا۔ ہر صوبہ اور ضلع کئی حصوں میں تقسیم تھی۔ ہر کمانڈر اپنے زیر اثر علاقے کا حکمران تھا۔ سب نے دیکھا کہ بے مفہوم جنگوں کی وجہ ...

مزید پڑھیں »

میدان وردک میں ہسپتال پر حملہ کھلی دہشت گردی ہے..؟!!

استعمار اور کٹھ پتلی فوجوں کے مشترکہ اور وحشت ناک رات کی کاروائیوں میں نہتے ہموطنوں نے کافی مصائب جھیلے ہیں۔07/اکتوبر 2001ء سے لیکر آج تک ہزاروں  گھروں میں استعمار  رات کی تاریکی میں گھس چکے ہیں اور وہاں سوئے ہوئے بچوں کو نہایت وحشت سے مار ڈالے ہیں، ماؤں کی جگرگوشے چھین لیے ہیں، عورتوں کو بیوہ کرلیے ہیں،  ...

مزید پڑھیں »

15/ فروری کا استعمار کے لیے اہم پیغام !!…

سب کو معلوم ہے کہ سابق سوویت یونین کی سرخ ریچھ لشکر نے 27/ دسمبر 1979ء کو وطن عزیز افغانستان پر حملہ کرکے افغان عوام کے خلاف ظالمانہ جنگ کا آغاز کیا ، افغانوں کو سالوں تک جارحیت میں رکھا اور امریکی استعمار کے مانند  ایسے مظالم اور سفاکانہ اعمال سرانجام دیے، جن کے تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔ غاصب ...

مزید پڑھیں »

جنرل جان کیمپیل کے غیرمعقول مطالبے؟!!

استعماری افواج کے جنگجو کمانڈر جان کیمپیل کا حالیہ بیان مفاہمتی عمل کو سبوتاژ کرنے کی تازہ کوشش ہے۔ انہوں نے اس سازش سے پردہ اٹھایا ، جسے امریکہ امن کے نام سے  لاگو کرنا چاہتا ہے۔ انہوں نے اس مرتبہ امریکی جارحیت کو جاری رکھنے کے  خواب کی مضحکہ خیز تعبیر پیش کی۔ امارت اسلامیہ کے مجاہدین کو طالبان ...

مزید پڑھیں »

مرحوم ملا محمد حسن رحمانی کی وفات کے حوالے امارت اسلامیہ کی  رہبری شوری کا اعلامیہ

المناک اطلاع ملی ہے کہ ملک کے معروف جہادی شخصیت ملا محمد حسن رحمانی صاحب وفات پاگئے۔ إِنَّا لِلّهِ وَإِنَّـا إِلَيْهِ رَاجِعونَ مرحوم رحمانی صاحب نے سوویت یونین کے جارحیت کے دوران وطن عزیز کے جنوب مغرب  علاقے میں جہادی محاذوں میں حصہ لیا اور اسی جہاد میں ایک پاؤں سے بھی ہاتھ دھوبھیٹے۔ جب امارت اسلامیہ کا تاسیس وجود ...

مزید پڑھیں »

کیا جنرل” جان میک نکلسن” جنگ جیت جائیگی ؟!!

میڈیا کے تازہ ترین رپورٹوں سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکی جنرل "جان میک نکلسن” کو وطن عزیز میں استعماری افواج کے حالیہ کمانڈر ” جان کیمبل” کی جگہ تعینات کیا گیا ہے۔ کانگریس نے نیکلسن کی تعیناتی تائید کی۔ موصوف کو  استعماری افواج کے کمانڈر کے طور پر  افغانوں کے قتل عام، تکالیف، ملک سے جبری بدری اور کابل ...

مزید پڑھیں »

ملک میں پائیدار امن کے حوالے سے امارت اسلامیہ کا عادلانہ مؤقف

سب کو معلوم ہے کہ 23 اور 24 جنوری 2016ء کو مملکت قطر کے دارالحکومت دوحہ شہر میں پگواش عالمی تنظیم نے وطن عزیز کے مسائل کے حل کی خاطر دو روزہ تحقیقاتی کانفرنس منعقد کی، جس میں امارت اسلامیہ کے سیاسی دفتر کے اعلی سطحی وفد کی جانب سے کانفرنس میں امارت اسلامیہ کے مؤقف کو 14 صفحات میں ...

مزید پڑھیں »

ہلمند جنگ میں استعمار کی شرکت امن کی راہ میں رکاوٹ کی نئی کوشش!!

سب گواہ ہیں کہ 2014ء کے آخری دنوں یعنی ایک سال قبل استعمار نے اعلان کیا کہ افغانستان میں ان کا جنگی مشن مزید اختتام کو پہنچا ہے۔ اس کے بعد افغان میں جنگ میں حصہ نہیں لے گی، بلکہ امداد اور حمایت کا نیا مرحلہ شروع ہوگا۔ نئے مشن کے لیے غاصب مبہم اور مشکوک کلمات کا استعمال کرتےرہے۔اس ...

مزید پڑھیں »

امارت اسلامیہ دنیا سے بہترین تعلقات کا خواہاں ہے

تمام منصف اور اہل بصیرت حضرات کو معلوم ہے کہ امارت اسلامیہ ابتداء ہی سے ایک پرامن ،  اسلامی اصولوں اور افغانی اقدار پر مبنی مکمل افغانی تحریک تھا۔ پہلے روز سے امارت اسلامیہ کے قائداوررہنماؤں کے اظہارات اور رسمی بیانات وطن عزیز افغانستان کے مسائل و مشکلات کے اردگرد گھومتے اور آج بھی اسی مدار پر گردش کررہےہیں۔ بے ...

مزید پڑھیں »

سوویت یونین کی جارحیت اور شکست استعمار کے لیے درس عبرت ہے

27/ دسمبر 1979ء کو(یعنی 36 سال پہلے) سوویت یونین کی  سرخ ریچھ نے افغان مقدس سرزمین پر جارحیت کی۔ اپنے غلاموں (خلق و پرچم) کے ذریعے افغانستان پر قبضہ کرلی۔ یہ منحوس سانحہ 27/اپریل 1978ء ثور کمیونسٹی کودتاہ کے  بیس ماہ بعد رونما ہوئی۔ غاصب افواج نے اپنے لے پالک غلام حفیظ اللہ امین کی حکومت کو نہایت وحشت سے ...

مزید پڑھیں »