قندوزآپریشن، 29 ہلاک  وزخمی،6 سرنڈر ، ٹینک وکافی اسلحہ غنیمت

منصوری آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے صوبہ قندوز کے صدرمقام قندوز شہر اور ضلع قلعہ ذال میں دشمن پر حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق جمعہ کے روز علی الصبح مجاہدین نے منصوری آپریشن کے سلسلے میں قندوز شہر کے ملرغی، کتہ خیل، باغ میری، خواجہ پستہ اور لودین کے علاقوں میں واقع دشمن کے مراکز، چوکیوں اور تازہ دم اہلکاروں پر ہلکے و بھاری ہتھیاروں سے وسیع حملہ کیا، جو دن بھر جاری رہا، جس کے نتیجے میں 29 اہلکار ہلاک و زخمی ہونے کے علاوہ دو فوجی ٹینک اور ایک رینجر گاڑی تباہ ہوئی۔

ذرائع کے مطابق مجاہدین نے ایک فوجی ٹینک، ایک رینجر گاڑی اور کافی مقدار میں مختلف النوع فوجی سازوسامان اور اسلحہ غنیمت کرلی۔

واضح رہےکہ لڑائی کے دوران دو مجاہدین بھی شہید ہوئے۔ تقبلہمااللہ

رپورٹ کے مطابق جمعہ کے روز علی الصبح مجاہدین نے ضلع قلعہ ذال کے مرکز، اس کی دفاعی چوکیوں اور فوجی مراکز پر میان کول، حلقہ کول اور سخت کول کے علاقوں میں اسی نوعیت کا حملہ کیا،جس کے نتیجے میں تمام علاقے اور ضلعی بازار پر مجاہدین نے قابض ہوئے۔

دوسری جانب جمعہ اور سنیچر کی درمیانی شب عشاء کے وقت ضلعی مرکز کے قریب واقع اہم چوکی میں تعینات 6 فوجیوں نے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے، جنہوں نے ایک ہیوی مشین گن، ایک راکٹ لانچر، 4 کلاشنکوفیں، ایک موٹرسائیکل اور دیگر فوجی سازوسامان مجاہدین کے حوالے کردیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*