فاریاب و ہلمند جھڑپیں،دو کمانڈروں سمیت 17 قتل، غنائم

منصوری آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے  فاریاب اور ہلمند صوبوں میں کٹھ پتلی دشمن پر حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب رات گئے صوبہ فاریاب ضلع شیرین تگاب کے اسلام قلعہ کے علاقے میں واقع جنگجوؤں کی چوکی پر مجاہدین نے شدید حملہ کیا، جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے چوکی فتح اور وہاں تعینات 4 جنگجو ہلاک جبکہ ایک زخمی ہونے کے علاوہ مجاہدین نے ایک ہیوی مشین گن، ایک راکٹ، دو کلاشنکوفیں، ایک آٹومیٹک گن، ایک وائرلیس اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔

ذرائع کے مطابق لڑائی کے دوران ایک مجاہد شہید جبکہ دوسرا زخمی ہوا۔ تقبلہ اللہ

دوسری جانب جمعرات کے روز صبح کے وقت مذکورہ علاقے میں مجاہدین اور پولیس کے درمیان لڑائی جاری ہے، جس میں اب تک 3 اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

اسی طرح جمعرات کےروز صبح کے وقت ضلع المار کے قلی چلی کے علاقے میں مجاہدین اور جنگجوؤں کے درمیان چھڑنے والی لڑائی کمانڈر عبدالصمد محافظ سمیت ہلاک جبکہ دو زخمی اور دیگر فرار ہوئے۔

واضح رہےکہ دشمن نے شدید بمباری بھی کی، جس سے الحمدللہ کسی قسم کا نقصان نہیں ہوا۔

صوبہ ہلمند سے آمدہ رپورٹ کے مطابق جمعرات کےروز صبح کے وقت ضلع گرمسیر کے خارکوہ، شملان اور سپین مسجد کے علاقوں میں مجاہدین نے آپریشن کے لیے آنے والے کٹھ پتلی فوجوں اور پولیس اہلکاروں پر وسیع حملہ کیا، جو سہ پہر تک جاری رہا اور اس دوران دشمن پر بارودی سرنگوں کے شدید دھماکے بھی ہوئے، جس کے نتیجے میں آپریشن کمانڈر  لیفٹیننٹ عبدالشکور سمیت 11 اہلکار ہلاک جبکہ 6 زخمی اور دیگر فرار ہوئے۔

الحمدللہ مجاہدین کا کسی قسم کا نقصان نہیں ہوا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*