قندہارر پکتیا آپریشن، 27 ہلاک، 4 سرنڈر، 3 گرفتار، غنائم

پولیس اہلکاروں اور کٹھ پتلی فوجوں پر قندہار اور پکتیا صوبوں میں حملے و دھماکے ہوئے۔

تفصیل کے مطابق اتوار کےروز صبح کے وقت صوبہ قندہار ضلع میوند کے جوگرم کے علاقے میں مجاہدین نے جنگجوؤں پر حملہ کیا،جس کے نتیجے میں 6 جنگجو ہلاک ہوئیں ۔ دریں اثناء مجاہدین نے تازہ دم اہلکاروں بھی نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں دو ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ دشمن کو مزید ہلاکتوں کا سامنا بھی ہوا۔

دوسری جانب اتوار کےروز دوپہر کے وقت ضلع نیش کے مرکز میں تعینات چار پولیس اہلکار امین اللہ ولد طالب جان، میرعالم ولد محمد نعیم، خالقداد ولد فیض اللہ اور سمیع اللہ ولد آغا جان نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مجاہدین سے آملے۔

نیز مطابق اتوار کےروز صبح کے وقت ضلع شاہ ولیکوٹ کے سرخبیب کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ  اور اس میں سوار پانچ اہلکار لقمہ اجل بن گئے۔

اسی طرح سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب عشاء کے وقت دوبلاغ کے علاقے میں واقع چوکی پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس میں تین فوجی مارے گئے۔

صوبہ پکتیا سے موصولہ رپورٹ کے مطابق اتوار کےروز سہ پہر کے وقت صدر مقام گردیز شہر کے شیخان کے علاقے میں مجاہدین نے پولیس اہلکاروں پر حملہ کیا، جس کے نتیجے میں تین اہلکار ہلاک جبکہ دو زخمی ہونے کے علاوہ ایک گاڑی بھی تباہ ہوئی۔

دریں اثناء تازہ دم اہلکاروں کو مجاہدین نے نشانہ بنایا او رلڑائی چھڑگئی، جس کے نتیجے میں دس اہلکار ہلاک اور مجاہدین نے  تین ہیوی مشین گن، دو کلاکوف، دو کلاشنکوف، ایک سنائیپرگن اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی اور ایک ٹینک بھی تباہ ہوا۔

واضح رہےکہ لڑائی کے دوران دو مجاہدین بھی زخمی ہوئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*