ہلمند: کاروائی جاری، 2 ٹینک تباہ،کمانڈر سمیت 37 ہلاک وزخمی

صوبہ ہلمند کے ناوہ، گرشک اور مارجہ اضلاع میں کٹھ پتلی فوجیوں، مقامی جگنجوؤں اور پولیس اہلکاروں سے جھڑپیں جاری ہے۔

تفصیل کے مطابق اتوار کے روز صبح آٹھ بجے کے لگ بھگ ضلع ناوہ کے لوئی گاؤں کے علاقے میں فوجیوں، پولیس اہلکاروں اور مقامی جنگجوؤں نے امریکی طیاروں ہمراہ آپریشن کا آغآز کیا، جنہیں شدید مزاحمت کا سامنا ہوا، جو اب تک شدت سے جاری ہے، جس سے لوئی گاؤں کے پولیس اسٹیشن کے اہم اور ظالم کمانڈر حاجی غنی سمیت 11 اہلکار قتل، 16 زخمی اور ایک ٹینک تباہ ہوا۔

یاد رہے کہ دوشمن کے فائرنگ سے 2 مجاہدین زخمی، جب کہ تیسرا شہید ہوا۔ تقبلہ اللہ تعالی

مزید تفصیل بعد میں ان شاء اللہ تعالی

ضلع گرشک سے اطلاع ملی ہے کہ اتوار کے روز صبح آٹھ بجے کے لگ بھگ سیدان کے علاقے میں فوجی ٹینک بارودی سرنگ سے ٹکراکرکے تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک ہوئے۔

دوسری جانب سنیچر کے روز دو پہر گیارہ بجے کے لگ بھگ پارچاؤ کے علاقے میں واقع چوکی میں تعینات رابط مجاہد نے ایک پولیس کو قتل کرکے، موٹرسائکل اور پستول سمیت مجاہدین تک پہنچنے میں کامیاب ہوا۔

جہادی ذرائع نے کہا کہ اتوار کے رات عشاء کے وقت آٹھ بجے کے لگ بھگ آدم خان کے علاقے کے بارئی کے مقام پر فوجیوں پر حملہ ہوا، جس سے 4 اہلکار موقع پر قتل ہوئے۔

الامارہ سائٹ کے ترجمان نے ضلع مارجہ سے اطلاع دی کہ اتوار کے رات شام سات بجے کے لگ بھگ ضلعی مرکز کے قریب مجاہدین نے ایک فوجی کو سنائپر گن سے نشانہ بناکر مار ڈالا۔

دوسری جانب اتوار کے رات دس بجے کے لگ بھگ مجاہدین نے اسی نوعیت حملے میں 3 پولیس کو قتل اور ایک کو زخمی کردیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*