ریڈیو آزادی کے پروپیگنڈے کے متعلق ترجمان کا بیان

بدھ کےروز 13/ ستمبر2017ء کو نام نہاد ریڈیو آزادی نے جو   وطن عزیز کی جارحیت کی وجہ سے ایجاد اور اس کی فریکوینسی امریکی بی 52 طیاروں سے افغانوں میں تقسیم کی گئی ہے، ایک رپورٹ شائع کی، کہ گویا امارت اسلامیہ کے بعض رہنماؤں نے مختلف ممالک میں پناہ لینے کی کوشش تیز کردی ہیں اور اس سلسلے میں امارت اسلامیہ کے نائب جناب مولوی محمدیعقوب مجاہد اور جناب صدر محمدابراہیم صاحب کے اسماء گرامی کا تذکرہ بھی کیا گيا ہے۔

ہم اس اینٹلی جنس اور جعلی رپورٹ کی پرزورتردید کرتے ہیں، امارت اسلامیہ ملک کے بیشتر اراضی پر حاکم ہے، گزشتہ 16 برسوں کے دوران ملک کی آزادی اور اسلامی نظام کے اعادے کی خاطر امارت اسلامیہ کی رہنماؤں اور کارکنوں نے جان و مال کی قربانیاں دی ہیں، کھبی بھی یہ تصور نہیں کرینگے کہ جہاد کو خیرباد کہہ کر کسی اور ملک ہجرت کریں۔

ڈیڑ عشرہ بیت چکا ہے کہ افغان مجاہد عوام کے خلاف کوئی امریکی پالیسی کامیاب ہوئی اور نہ ہی میڈیا و اینٹلی جنس پروپیگنڈوں نے جارحیت کے خلاف جاری جہاد اور مزاحمت کو نقصان پہنچایا اور اس کے علاوہ  غاصبوں کی شکست اور شرمندگی کا روک تھام نہیں ہوا۔

ہمیں یقین ہے کہ حالیہ جھوٹی کوششیں بھی کوئی نتیجہ نہیں دیگی۔ ہماری مجاہدین اور عوام نے امارت اسلامیہ کی رہنماؤں کو مختلف امتحانات میں آزماکر پہنچان لیے ہیں، دشمن کی اس نوعیت کی افواہات کسی کو تشویش میں مبتلا نہیں کریگی۔

ہم دشمن سے وابستہ ذرائع ابلاغ سمیت تمام دشمن جہتوں کو بتاتے ہیں کہ تمہارے جعل کاری، پروپیگنڈے اور جھوٹ سےامارت اسلامیہ کے کسی رکن کی جہادی اور کفرضد ذہنیت میں تبدیلی لائے گی اور نہ ہی تمہارے اسی طرح پروپیگنڈے افغان ملت  کو ورغلا سکے گی اور تم کبھی بھی اس بچگانہ حرکات کی وجہ سے اپنے مقاصد اور شیطانی امیدوں تک نہیں پہنچ سکوگے۔ ان شاءاللہ

ذبیح اللہ مجاہد ترجمان امارت اسلامیہ افغانستان

23 / ذی الحجہ 1438 ھ بمطابق 14 / ستمبر 2017 ء

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*