ماہنامہ شریعت کا نیا شمارہ منظر عام پر

شمارہ نمبر 68

جہاں ایک طرف حق و باطل کا معرکہ بم بارود کے زور پر محاذوں پر لڑا جا رہا ہے، وہیں نظریاتی جنگ کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کے ‏لیے امارت اسلامیہ کا اکتوبر کا ‏سرکاری میگزین ’’ماہنامہ شریعت‘‘ اپنی تمام تر رونقوں اور رعنائیوں کے ساتھ صحافتی اُفق پر جلوہ گر ہو چکا ‏ہے، جس میں افغانستان کے تازہ جہادی و سیاسی حالات کے ‏منظرنامے کے حوالے سے شان دار تحریریں شامل کی گئی ہیں۔ اداریے میں لکھا ہے:

’’جنرل نکولسن کا کہنا ہے کہ طالبان (مجاہدین) ہمت ہار گئے ہیں اور اُن کے پاس کامیابی کے امکانات کم ہیں۔‘

اس ناکام و نامراد جنرل کی یہ بات یقینا اس قابل ہے کہ اسے جنگ کے خطرناک ماحول میں دل چسپ لطیفہ سمجھ کر ہنسا جائے۔ حقیقت یہ ہے کہ مجاہدین افغانستان کے چاروں طرف علاقوں پر علاقے فتح کرتے چلے جا رہے ہیں۔ کابل ادارے کے گورنر، وزارء اور حکومت کے دیگر بڑے اہل کار اعتراف کر رہے ہیں کہ ہمارے صوبوں کا سقوط (مجاہدین کے ہاتھ لگنے) کا خطرہ ہے۔ پوری دنیا کہہ رہی ہے کہ افغانستان کے نصف سے زائد حصے پر مجاہدین کی حکومت ہے۔ دوسری طرف خود ٹرمپ نے مجاہدین کے خلاف لڑی جانے والی اس جنگ کو امریکا کی سب سے طویل اور نقصان دِہ جنگ قرار دیا ہے۔ جب کہ امریکی وزیرِدفاع نے واضح الفاظ میں کہا ہے:

’یہ جنگ ہمارے جتنے کی نہیں ہے۔‘

جب امریکا کے حواس باختہ لیڈر خود اپنی شکست تسلیم کر رہے ہیں تو نکولسن کس منہ سے کہتے ہیں کہ مجاہدین حوصلہ ہار گئے ہیں؟ امریکا اور اس جنگ کے امریکی ذمہ داروں نے خود شکست کا اعتراف کیا ہے۔ تو ان امریکیوں کے اعتراف کی روشنی میں جنگ سے حوصلہ کون ہارا ہے؟ مجاہدین یا امریکا؟!‘‘

تازہ شمارے میں اسی طرح کی دیگر حقائق کشا تحریریں شاملِ اشاعت ہیں۔ شریعت میگزین اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ آسمانِ صحافت پر طلوع ہوا ہے۔ شریعت ‏میگزین کی یہ خاصیت کافی مقبول ہے کہ یہ ہمیشہ سے کسی بھی واقعے کا وہ رُخ عوام کے سامنے لاتا ہے، جو درحقیقت معروضی حقائق کے مطابق ہوتا ہے۔ میگزین میں شامل برما کے کے حوالے سے ایک مضمون میں لکھا ہے:

’’ عالمی میڈیا کی منافقت ساری دنیا کے سامنے ہے۔ امریکا میں آنے والے طوفانوں کی کوریج عوام کے لیے احتیاطی تدابیر کتنے اہتمام سے دکھائی جاتی ہیں، مگر اسی میڈیا کو برما کا نام سنتے ہی نیند آ جاتی ہے۔ دوسری طرف برما کے مظلوم مسلمانوں کے حوالے سے اسلامی دنیا پر مسلط حکمرانوں کی خاموشی سب سے زیادہ دردناک اور اذیت ناک ہے۔ صرف ایک طیب اردگان نے مظلوموں کے حوالے سے کچھ کیا ہے۔ برما کے مسلمانوں کے ساتھ اظہارِ ہمدردی کے لیے طیب اردگان نے اپنی اہلیہ اور وزیرخارجہ کو بنگلہ دیش بھیجا اور وہاں کیمپوں میں پناہ گزین مہاجرین سے ملاقات کی۔ طیب اردگان انتظامیہ نے گزشتہ 5 سالوں میں برمی مسلمانوں سے 70 ملین ڈالر کے برابر تعاون کیا ہے۔ اب بنگلہ دیش سے کہا ہے کہ ’برما سے آئے ہوئے مسلمانوں کو واپس نہ بھیجے۔ ان پر ہونے ولاے تمام اخراجات کے مصارف ترکی ادا کرے گا۔‘‘

میگزین میں ’ٹرمپ کی جنگی پالیسی کے حوالے سے لکھا ہے:

’’افغان باشندوں کو اس بات کا انتظار تھا کہ امریکا ماضی کے تلخ تجربات سے سبق حاصل کر چکا ہوگا اور نئی اسٹریٹجی میں طاقت اور جبر کے بجائے امن اور مصالحت پر توجہ دے کر عقل و دانش کی روشنی میں نئی پالیسی سامنے لائے گا، مگراُس کی نامناسب پالیسی کی وجہ سے چین اور روس سمیت نمایاں ممالک نے ٹرمپ کی اسٹریٹجی کے اعلان کے بعد صریح مخالفت کا مؤقف اختیار کیا ہے۔ اس لیے بلاشک و شبہ ہم کہہ سکتے ہیں کہ امریکا کے ناپاک اور بُرے عزائم کے مقابلے میں خطے اور پڑوسی ممالک غیرجانب دار نہیں رہ سکتے، وہ ضرور امارت اسلامیہ کی برحق مزاحمت اور سنجیدہ مؤقف کی ہمہ پہلو حمایت کریں گے۔‘

علاوہ ازیں اس ماہ کے شمارے میں بہت بہترین تحریریں شامل ہیں، جو یقینا قارئینِ ’’شریعت‘‘ کے سنجیدہ ذوق کے حوالے سے بہت عمدہ ہیں۔ امید ہے قارئین اس دفعہ ‏کے شمارے کو بھی حسبِ سابق اپنے عمدہ ذوق کا ترجمان پائیں گے۔ میگزین میں امارت اسلامیہ کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا انٹرویو بھی شامل ہے، جو افغانستان کے موجودہ حالات کو سمجھنے میں بہت معاون ہے۔ علاوہ ازیں میگزین میں سابقہ روایت کے مطابق دل چسپ سلسلوں سمیت عالمِ اسلام کے حالات کے حوالے سے پُرمغز تحریریں شاملِ اشاعت ہیں، جو قارئین کی توجہ کے لائق ہیں۔

ماہنامہ شریعت ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے درج ذیل لنکس استعمال کریں:

پی ڈی ایف فائل ڈاونلوڈ لنک ‏

http://download1175.mediafire.com/analap6jeuog/yz5ytte9rda9dcv/shariat-68.pdf

یونیکوڈ{ورڈ}فائل ڈاونلوڈ لنک

http://download1493.mediafire.com/bnf5jro430sg/h6pd9uyia4l4593/shariat–68+for+web.docx

—————————————————————–‏

ماہنامہ شریعت فیس بک پیج

https://www.facebook.com/shariatmagazine

ماہنامہ شریعت کا ٹویٹر اکاونٹ

الاماره اردو  ٹیلگرام چینل

https://telegram.me/joinchat/Bro9Rz5bIaIhALOk8Laclg

الامارہ وٹس آپ نمبر

‎+93 70 863 8285‎

 

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*