پکتیا، غزنی اور زابل میں بیرونی شہریوں سمیت مجاہدین کی شہادت بےبنیاد ہے

آج منگل کے روز 05/ دسمبر 2017 ء کو مزدور دشمن کی سیکورٹی ذرائع نے افواہ پھیلا دی کہ پیر اور منگل کی درمیانی شب پکتیا، غزنی اور زابل صوبوں کے مربوطہ علاقوں میں چھاپوں کے دوران بیرونی شہریوں سمیت متعدد مجاہدین شہید  اور یا گرفتار ہوئے ہیں۔

ہم دشمن کے اس پروپیگنڈے کی پرزور الفاظ میں تردید کرتے ہیں ، گذشتہ 24 گھنٹوں میں مذکورہ صوبوں میں کسی قسم کا چھاپہ اور نقصان کا کسی قسم کا  واقعہ پیش نہیں ہوا ہے، کوئی مجاہد شہید ہوا ہے اور نہ ہی کوئی گرفتار عمل میں لائی گئی ہے۔

خاص کر بیرونی شہریوں کی موجودگی یا گرفتاری وہ بھی مجاہدین کے ہمراہ تعاون کے تحت وہ پروپیگنڈہ اور دعوہ ہے ، جسے دشمن وقتافوقتا مجاہدین کے متعلق پروپیگنڈے کے طور پر استعمال کرتے رہتے ہیں۔

جیساکہ مزدور دشمن مختلف علاقوں میں سرنگوں ہوا ہے،جسے بیرونی آقاؤں کی جانب سے دباؤ کا سامنا ہے، کہ مجاہدین کے خلاف پیشرفت کریں، جیسا کہ عملی میدان میں دشمن کے لیے کوئی پیشرفت ممکن نہیں ہے،تو سویلین افراد کو شہید کرکے انہیں بیرونی شہری اور مجاہدین کی طرف منسوب کرتے ہیں  اور یا  مکمل  جھوٹے دعوے پھیلاتے ہیں۔

مجاہدین کی صفوف میں کوئی بیرونی شہری موجود ہے  اور نہ ہی دشمن کے لیے آسان ہے کہ مجاہدین کو کافی  نقصانات پہنچا دیں۔

دشمن کے اس پروپیگنڈے کو ملت کوئی اہمیت نہیں دیتی۔ الحمدللہ مجاہدین کو کہیں بھی نقصان نہیں پہنچا ہے۔

ذبیح اللہ مجاہد ترجمان امارت اسلامیہ

17/ ربیع الاول 1439 ھ بمطابق 05 / دسمبر 2017 ء

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*