امریکی درندگی، مدرسے پر چھاپہ، 26 طلبہ گرفتار، 4 شہید

جارح امریکی و کٹھ پتلی فوجوں نے ننگرہار، خوست اور پکتیکا صوبوں میں مظلوموں کا جینا حرام کردیا۔

آمدہ رپورٹ کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب رات گئے جارح امریکی وکٹھ پتلی فوجوں نے صوبہ خوست ضلع مندوزئی کے ورزی کے علاقے میں واقع دینی مدرسے پر چھاپہ مار کر وحشت وبربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے 26 طلبہ کرام کو حراست میں لیے، جبکہ مدرسے کے تمام سامان  اور برتن وغیرہ کو لوٹ لیے۔

رپورٹ کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب جارح صلیبی امریکی و کٹھ پتلی فوجوں نے صوبہ ننگرہار ضلع چپرہار کے صالح زئی گاؤں پر شب خون مارا اور ایک ہی خاندان کے چار افراد (والد، بیٹے اور دو بھتیجوں) کو نہایت سفاکیت سے شہید کردیے۔اناللہ وانآ الیہ راجعون

دوسری جانب پیر اور منگل کی درمیانی شب صوبہ پکتیکا ضلع جانی خیل کے بازار میں کٹھ پتلی فوجوں نے ایک شہری کے دکان سے 80عدد سولر،50 عدد بیٹریاں، پانچ لاکھ نقد افغانی اور دیگر لوازمات لوٹ لیے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*