پوری دنیا ’’امریکا مردہ باد‘‘ کہہ رہی ہے

آج کی بات:

فلسطینی شہر یروشلم کے حوالے سے امریکی صدر ٹرمپ کے فیصلے کے خلاف پوری دنیا نے شدید ردعمل ظاہر کیا ہے۔ ٹرمپ کے اقدام کو اسلام اور انسانیت دشمن قرار دیا۔ بیک آواز پوری دنیا میں امریکا مردہ باد کے نعرے  گونج رہے ہیں۔ مسلمانوں کے دشمن ٹرمپ کے دور صدارت کا ایک سال مکمل ہو رہا ہے۔ انہوں نے انتخابی مہم کے دوران اعلان کیا تھا اگر وہ صدر منتخب ہوئے تو وہ امریکی سفارت خانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کریں گے۔

ٹرمپ نے گزشتہ بدھ کے دن کہا کہ 1995 میں امریکی پارلیمانی کمیٹیوں کی سفارشات پر سینیٹ نے اس قانون کی منظوری دی تھی کہ امریکی سفارت خانے کو یروشلم منتقل کیا جائے، تاہم سابق امریکی صدور نے یہ قدم اٹھانے کی ہمت نہیں کی تھی۔ کیوں کہ وہ مسلمانوں کے شدید ردعمل سے خوف زدہ تھے، لیکن اب ان کا ادارہ یہ کام کرے گا اور 6 ماہ میں اس پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے گا۔

ٹرمپ کی اس حماقت کے بعد مسلم امت نے عرب حکمرانوں اور فلسطین کے حکام کے ردعمل سے قبل دنیا بھر میں بھرپور احتجاج کیا۔ دنیا کے کونے کونے میں احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں اور مظاہرے کیے گئے۔ عالمِ اسلام نے یہ طے کر رکھا ہے کہ بیت المقدس مسلمانوں کا قبلہ اول ہے اور اس پر اسرائیل کا قبضہ ناقابل قبول ہے۔ مسلمانوں نے بڑے پیمانے پر مظاہروں کا اہتمام کیا اور امریکا و اسرائیل کے خلاف اپنے غصے اور نفرت کا اظہارکرتے ہوئے اسلامی ممالک کے حکمرانوں پر زور دیا کہ وہ خواب غفلت سے بیدار ہو کر بیت المقدس کے تحفظ اور دفاع کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔

ٹرمپ کے اس نفرت آمیز فیصلے نے ثابت کر دیا ہے کہ امریکا کس حد تک اسلام اور مسلمانوں کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ بالخصوص گزشتہ 70 سال سے فلسطین میں امن و مفاہمت کے حوالے سے امریکا کے جھوٹے وعدے اور شیطانی چالیں بھی بے نقاب ہو گئی ہیں۔

امریکا نے اس اقدام کے ذریعے ثابت کر دیا کہ وہ اسلام اور مقدس اسلامی مقامات کا دشمن ہے۔ جب کہ امریکا فلسطین کی دھرتی پر امن نہیں چاہتا اور نہ ہی فلسطینی مسلمانوں کو حقوق دینے کے لیے تیار ہے۔

دوسری جانب ٹرمپ کے اس اقدام اور شیطانی فیصلے کے خلاف پوری دنیا میں اسلامی بیداری کی لہر اٹھی ہے۔ یہ واضح ہوا ہے کہ امت مسلمہ اپنے غافل اور امریکی سازشوں کے شکار اور امریکی شیطنت کے ہمنوا حکمرانوں کی طرح اس اہم مسئلے پر ہرگز چُپ نہیں رہے گی۔ وہ شجاعت کا مظاہرہ کر کے اس کے خلاف بھرپور آواز اٹھائے گی اور اس نے عملی طور پر یہ ثابت کر دیا ہے۔

ہم دعا کرتے ہیں کہ مسلمانوں کی حالیہ وحدت اور یک جہتی مزید وسیع اور مستحکم ہو۔ یہ وحدت امتِ مسلمہ کو امریکی شیطان سے نجات دلانے والی ہے۔ اللہ تعالی مدد فرمائے۔ آمین

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*