داعش اور حزب کےپانچ کمانڈروں سمیت 130 اہلکار سرنڈر

امارت اسلامیہ کے دعوت و ارشادکمیشن کے کارکنوں کی دعوت کو لبیک کہتے ہوئے صوبہ کنڑ کے نرنگ اور مانوگی اضلاع میں داعش اور حزب کے درجنوں اہلکاروں نے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے۔

آمدہ رپورٹ کے مطابق پیر کےروز ضلع نرنگ کے مربوطہ علاقوں میں داعش اور حزب کو منسوب 105 جنگجوؤں کے چار کمانڈروں زاخیل، عبدالجلال عرف سلمان ، حبیب اللہ اور نظامی نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے جنگجو گرہوں سے بیزاری کا اعلان کرتے ہوئے امارت اسلامیہ کے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے، جنہوں نے مختلف النوع ہلکے و بھاری ہتھیار بھی مجاہدین کے حوالے کردیے۔

دوسری جانب چند روز قبل ضلع مانوگئی کے کلایگل اور گرنگل کے علاقوں میں داعش گروہ سے وابستہ 25 جنگجو کمانڈر محمدعارف کی قیادت میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین سے آملے، جنہوں نے اپنا اسلحہ اور دیگر فوجی سازوسامان بھی مجاہدین کے سپرد کردیا۔

واضح رہےکہ سرنڈر ہونے والے اہلکاروں نے امارت اسلامیہ کے زعیم عالی قدر امیرالمؤمنین شیخ الحدیث مولوی ہبۃ اللہ اخندزادہ حفظہ اللہ سے بیعت کا اعلان بھی کیا۔

قابل یادآوری ہےکہ یہ سلسلہ تاحال جاری ہے اور عنقریب وسیع علاقوں سے اللہ تعالی کی نصرت سے دونوں جنگجو گروہوں کا صفایا کردیا جائیگا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*