بغلان، کنڑ و بلخ ، حملے پسپا، شاہراہ بند، 3سرنڈر

 

امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بغلان اور کنڑ صوبوں میں دشمن پر حملہ کیا،جبکہ صوبہ بلخ میں تین جنگجو  مجاہدین سے آملے۔

آمدہ رپورٹ کے مطابق بدھ کے روز صبح کے وقت مجاہدین نے صوبہ کنڑ ضلع منورہ کے مرکز، پولیس ہیڈ کوارٹر اور آس پاس چوکیو ںپر میزائل داغے، جو اہداف پر گر کر دشمن کے لیے جانی و مالی نقصانات کے سبب بنے۔

دوسری جانب منگل کے روز صبح کے وقت صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے ڈنڈشہاب الدین کے بالا دوری کے مقام پر مجاہدین نے کابل، قندوز قومی شاہراہ کو دشمن کی آمدورفت کے لیے بند کردی اور اس دوران کٹھ پتلی فوجوں اور پولیس اہلکاروں نے شاہراہ سے رکاوٹیں دور کرنے کی کئی بار کوششیں کیں، لیکن ہر بار اللہ تعالی کی نصرت سے دشمن جانی و مالی نقصانات کے ہمراہ پسپائی اختیار کرلیتے۔

اسی طرح صوبہ بلخ ضلع چمتال کے رہائشی نام نہاد قومی لشکر کے تین جنگجوؤں محمدنعیم ولد جمعہ گل ، ضیاءخان ولد داؤدشاہ اور ولی احمد ولد شیرخان نے مخالفت سے دستبرداری کا اعلان کیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*