غزنی و ہلمند، فوجی چھاپے، بچہ شہید، بوڑھا بیٹے سمیت گرفتار

کٹھ پتلی فوجوں نے غزنی اور ہلمند صوبوں میں نہتے شہریوں کا جینا حرام کردیا۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب وحشی فوجوں  نے صوبہ غزنی ضلع گیلان کے لونگ گاؤں پر ملاخیرمحمد کے گھر پر چھاپہ مارکرکے تلاشی اور درندگی کے بعد ملاخیرمحمد جن کی عمر ستر سال  اور ان کے بیٹے حافظ القرآن کر عمر کو حراست میں لیے۔

دوسری جانب بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب عشاء کے وقت صوبہ ہلمند ضلع سنگین کے چرخکیان ماندہ کے علاقے میں کٹھ پتلی فوجوں نے نماز تراویح پڑھنے کے بعد ہجوم پر فائرنگ کی،جس کے نتیجے میں ایک تیرہ سالہ لڑکا شہید جبکہ متعدد زخمی ہوئے۔ اناللہ وانآ الیہ راجعون

واضح رہےکہ کابل انتظامیہ کے سربراہ اشرف غنی نے 27 رمضان المبارک سے 05 شوال المکرم تک یک طرف سیزفائر کا اعلان کیا تھا، لیکن بار بار دشمن خلاف ورزی کرتا  رہتا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*