کابل، بغلان و غزنی، اعلی عہدیداروں سمیت 18 ہلاک و زخمی

امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے کابل، بغلان اور غزنی صوبوں میں کٹھ پتلی دشمن کو نشانہ بنایا۔

آمدہ رپورٹ کے مطابق بدھ کے روز مجاہدین نے کابل شہر کے کمپنی کے علاقے آب رسالی کے مقام پر مجاہدین کے حملے میں چیف ایگزیکٹیو ڈاکٹر اللہ عبداللہ کا مشیر کمانڈر نورآغا زخمی اور ان کا محافظ مار گیا۔

دوسری جانب جمعرات کےروز صبح کے وقت صوبہ بغلان ضلع مرکزی بغلان کے شہرجدید کے علاقے میں مجاہدین نے پولیس ہیڈ کوارٹر آفسر کمانڈر نورآغاخان کو قتل کردیا اور ان کے پستول کو غنیمت کرلی۔

رپورٹ کے مطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب صوبہ غزنی ضلع شلگر کے خانے قلعہ کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں 4 فوجی ہلاک جبکہ 6 زخمی ہوئے۔

دریں اثناء ضلع قرہ باغ کے اموگی کے علاقے میں جنگجوؤں کی چوکی پر حملے کے دوران 3 شرپسند ہلاک جبکہ 2 زخمی اور ساتھ ہی تازہ دم اہلکاروں پر ہونے والے حملے میں ایک ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*