بامیان، جوزجان و قندوز فتوحات،3 ٹینک تباہ، کمانڈر سمیت ہلاکتیں

الخندق آپریشن کےسلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے جوزجان،بامیان اور قندوز صوبوں میں حملہ کیا۔

آمدہ رپورٹ کے مطابق جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب عشاء کے وقت صوبہ جوزجان ضلع فیض آباد کے مربوطہ علاقے واقع چوکی پر مجاہدین نے حملہ کرکے اسے تباہ کردی اور ساتھ ہی تازہ دم اہلکاروں کو بھی نشانہ بنایا گیا،جس کے نتیجے میں ایک ٹینک تباہ ہوا اور کمانڈر مرائی محافظ سمیت ہوا اور ساتھ ہی مجاہدین نے ایک ہیوی مشین گن، پینتیس ہزار افغانی اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔

دوسری جانب جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب صوبہ قندوز کے صدرمقام قندوز شہر کے مربوطہ علاقے میں مجاہدین نے چوکیوں پر اسی نوعیت کا حملہ کیا، جو اطلاع آنے تک جاری ہے، جس میں اب تک کٹہ خیل چوکی فتح اور دو ٹینک تباہ ہوئے ہیں اور ساتھ ہی دشمن کو ہلاکتوں کا سامنا بھی ہوا ہے۔

اسی طرح مجاہدین نے خاد آباد ، امام صاحب اور دشت آرچی اضلاع میں دشمن کو نشانہ بنایا ہے اور اس وقت 20 کے لگ بھگ چوکیاں مجاہدین کے شدید محاصرے میں ہے۔ تفصیل بعد میں ان شاءاللہ

صوبہ بامیان سے اطلاع ملی ہےکہ جمعہ کے روز صبح کے وقت ضلع غندک کے چرائی سنگپر کے علاقے میں مجاہدین نے پولیس کاروان پر حملہ کیا، جو تاحال جاری ہے، جس میں اب دو گاڑیاں تباہ ہوئی اور صوبائی پولیس چیف کمانڈر سیدولی اور اینٹلی جنس ڈائریکٹر سمیت متعدد اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*