قندوز وبدخشان میں جھڑپیں، کمانڈروں سمیت 92 ہلاک و زخمی

الخندق آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندوز اور بدخشان صوبوں میں دشمن کے مراکز اور کاروان پر حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق جمعہ کے روز علی الصبح مجاہدین نے صوبہ قندوز کے صدرمقام قندوز شہر کے زرخرید، باغ شرکت، سہ صدفامیلی، حلقہ نمبر3 اور امام صاحب کے بندر کے علاقوں میں مجاہدین نے امام صاحب اور دشت آرچی اضلاع کو ملانے والے روڈ کو بند کرکے دشمن  کی چوکیوں اور مراکز پر حملہ کیا، جو اطلاع آنے تک جاری ہے، جس میں اب تک 17 اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے۔

ذرائع کے مطابق لڑائی کے دوران ایک مجاہد شہید جب کہ دوسرا زخمی ہوا۔ تقبلہ اللہ

دوسری جانب کٹہ خیل کے علاقے میں چوکی پر حملے کے دوران 20 اہلکار ہلاک ہوئے اور ساتھ ہی مجاہدین نے تازہ دم اہلکاروں کو نشانہ بنایا،جس میں اب تک 3 کمانڈوز ہلاک جب کہ 29 اہلکار شدید زخمی ہوئے ہیں۔

صوبہ بدخشان سے اطلاع ملی ہےکہ جمعہ کے روز صبح کے وقت ضلع ارگو کے چشمہ ایثار، چنگ ہار اور تاجکان کے علاقوں میں مجاہدین نے سیکورٹی فورسز پر  حملہ کیا،جس کے نتیجے میں دو کمانڈروں عبدالبر اور شمس اللہ سمیت 11 ہلاک جب کہ 5 زخمی ہوئے اور ایک ٹینک بھی تباہ ہوا ہے۔

اسی طرح جمعرات کےروز مغرب کے وقت ضلع درایم کے دوآبہ کے علاقے میں مجاہدین نے دشمن پر حملہ کیا، جو رات تک جاری رہا، جس کے نتیجے میں 3 اہلکارہلاک جب کہ 4 زخمی ہوئے۔

ذرائع کے مطابق جمعہ کے روز مجاہدین نے ضلع کشم کے یاورزن کے علاقے میں سیکورٹی الہکار صدام ولد خلیل کو اسلحہ سمیت گرفتار کرلیا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*