ظالموں کا برا انجام

آج کی بات

 

مجاہدین نے الخندق آپریشن کے تحت جارحانہ، فدائی اور گوریلا کارروائیوں کا سلسلہ تیز کر دیا، مجاہدین کے رابطہ کار اور پیچیدہ حملوں کے نیتجے میں گزشتہ دو ہفتوں کے دوران دشمن کے اعلی حکام کو نشانہ بنایا گیا اور مظلوم عوام کو ان کے ظلم سے نجات ملی ۔

گزشتہ روز صوبہ فراہ میں مجاہدین نے دشمن کا ایک ہیلی کاپٹر مار گرایا جس میں کمانڈر نعمت، فراہ کی صوبائی کونسل کے سربراہ فرید بختور سمیت 25 اعلی فوجی اور سول حکام ہلاک ہوئے ۔

دو ہفتے قبل ہلمند میں امریکہ کے وفادار عبدالجبار قہرمان اور قندہار میں جارحیت پسندوں کے ایجنٹ جنرل رازق مجاہدین کے حملوں میں ہلاک ہوئے، اسی طرح روزگان میں ظالم اور درندہ صفت کمانڈر حکیم شجاعی بھی طالبان کے حملے میں شدید زخمی اور ان کے چار کمانڈروں سمیت 28 اہل کار مارے گئے ۔

بہترین کہاوت ہے کہ ظلم کا خانہ خراب ہے، جنرل عبدالرازق اور عبدالجبار قہرمان جو ظلم میں شہرت رکھتے تھے، انہوں نے ہزاروں مظلوم شہریوں کو تہہ تیغ سے نکالا تھا مگر ان کے ظلم کا بدلہ مجاہدین نے لے لیا اور وہ اپنے ہی محافظوں کے درمیان نشانہ بن گئے ۔

اسی طرح مجاہدین کے حملوں میں ملک بھر میں بہت سارے علاقوں سے دشمن کو پسپا کر دیا گیا جس کے نتیجے میں مجاہدین کے زیر کنٹرول علاقوں کا دائرہ مزید وسیع ہوا اور وہاں کے عوام کو جان و مال کا تحفظ یقینی ہوا ۔

امارت اسلامیہ نے ہمیشہ اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ مظلوم عوام کا بدلہ ضرور لیا جائے گا، مجاہدین ملک بھر میں دشمن پر حملہ آور ہیں اور مظلوم شہریوں پر ظلم و ستم کا بدلہ لے رہے ہیں، مذکورہ حملے بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے جس میں دشمن کو بھاری جانی اور مالی نقصان کا سامنا ہوا ۔

امارت اسلامیہ اپنے عوام، اقدار اور مفادات کے تحفظ کے لئے مصروف عمل ہے، دشمن کو جرائم کی سزا ضرور دی جائے گی اور اس کے مذموم مقاصد ناکام بنانے کی کوشش کی جائے گی، مجاہدین ملک کی آزادی اور اسلامی نظام کے نفاذ کے لئے مقدس جہاد کررہے ہیں اور اس وقت تک یہ جہاد جاری رہے گا جب تک مطلوبہ مقاصد حاصل نہیں ہوں گےاور ان مقاصد کے حصول کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائے گا، وہ وقت قریب آیا ہے کہ شہداء کا خون رنگ لائے گا، وطن عزیز ایک بار پھر آزاد اور اس میں اسلامی نظام نافذ ہو جائے گا ۔ ان شاء اللہ تعالی

 

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*